A Project of
SAHE-logo-high brown cqe-logo final

Humshehri: Thinking Pakistan's History

Thinking Pakistan's History

تصوّف (Sufism)

English Version

تصوّف، اسلام کا صوفیانہ پہلو،جس نے دسویں صدی میں برصغیر میں اپنی جڑ پکڑ لی۔

Last Updated: 14 Mar. 2014

(History and famous Sufis) تاریخ اور مشہور صوفیا کرام

Data Ganj Baksh hrs Data Ganj Baksh Urs
(Haq Nawaz)

تصوّف اسلام کا ایک صوفیانہ اور باطنی پہلو ہے جو کہ آٹھویں صدی کے قریب اُبھر کر سامنے آیا۔ گیارہویں صدی تک یہ اسلامی علوم میں سے ایک منتظم اور تسلیم شدہ علم کی حیثیت اختیار کر چکا تھا۔ برصغیر میں تصوّف کے روحانی نقطہِ نظر نے بہت سے لوگوں کو اپنی جانب راغب کیا اور اس نے بہت تیزی سے اپنی جڑ پکڑی۔ جنوبی پنجاب اور سندھ کے علاقوں سے بہت سے صوفی مفکرین اور شاعروں نے پاکستان میں اپنی ابتداء کی۔ یہاں کئی صوفی بزرگوں کے مزاروں پراُن کا عُرس یا برسی منائی جاتی ہے۔ ان میں سے چند ناموں میں ،پاکپتن میں بابا فرید، لاہور میں داتا گنج بخش، قصور میں بُلھے شاہ، ملتان میں شاہ رُکنِ عالم، سیہون میں لال شہباز قلندر، اور بھِٹ شاہ میں .................۔۔........۔۔.......۔۔..۔۔۔۔................ شاہ عبدالطیف بھٹائی کے عُرس شامل ہیں۔

( Beliefs and practices) عقائد اور طرزِ عمل

تصوّف کی اصل روح سچائی کا بے لوث سامنا اور اس کی عملی تشکیل ہے۔ صوفیا کرام اپنی زندگیوں کو اللہ کی جانب ایک سفر کی نظر سے دیکھتے ہیں۔ وہ اس بات پر یقین رکھتے ہیں کہ محبت اور عقیدت کے زریعے اس زندگی میں اللہ کی قربت حاصل کی جا سکتی ہے۔ صوفیا کرام کے اللہ کی راہ میں ریاضت کے مختلف طریقے ہیں۔ان میں سے ایک طریقہ قرآنی آیات کی تلاوت، خدائی ناموں ، یا نبی کے اقوال کے زریعے خُدا کا ذکر یا اُسے یاد کرنا ہے۔

Find out more

Books & Articles

Schmidle, Nicholas. "Pakistan's Sufis Preach Faith and Ecstasy." Smithsonian Magazine. Dec. 2008.

"Sufism." In The Oxford Dictionary of Islam. Ed. John L. Esposito. Oxford Islamic Studies Online.

Websites

BBC Religions: Sufism

Cobtribute
p5