A Project of
SAHE-logo-high brown cqe-logo final

Humshehri: Thinking Pakistan's History

Thinking Pakistan's History

اجرک (Ajrak)

English Version

اجرک ، ایک منفرد بلاک پرنٹڈ سندھی کپڑا، وادئ سندھ کی تہذیب جتنا قدیم خیال کیا جاتا ہے۔ اس کو بنانے کے لیےوقت اور ماحول کے پچیدہ علم کی ضرورت ہے۔

Last Updated: 19 Nov. 2013

(Origins and significance)بنیاد اور اہمیت

Harpa Bust of Priest-King
(Harappa.com)

اجرک ایک منفرد بلاک پرنٹڈ کپڑا ہے جو سندھی ثقافت اور روایت کی ایک علامت بن گیا ہے۔ عربی لفظ أزرق سے ماخوذ، جس کا مطلب نیلا رنگ ہے، اجرک کی تاریخ کا سلسلہ وادئ سندھ کی تہذیب سے جا ملتا ہے۔ موئن جودڑو سے ایک پجاری کی مورتی دریافت ہوئی جس کے کندھے پر کپڑے کا ایک ٹکڑا لپٹا ہوا تھا جو کہ اجرک سےملتا جلتا ہے۔ ایک ہمہ گیر کپڑا، مرد عام طور پر اسے کندھے پر یا سر پر پگڑی کے طور پر پہنتے ہیں، جبکہ خواتین اسے خود کو ڈھانپنے کے لیے ایک چادر یا اپنےبچوں کے عارضی جھولے کے لیے استعمال کرنے کو ترجیح دیتی ہیں۔ اس کی قدروقیمت کی ایک علامت کے طور پر، اجرک اکثر تحفے میں دیا جاتا ہے۔

(Making Ajrak) اجرک بنانے کا عمل

Culture Sind Landing page img Ajrak cloth
(Indus Crafts)

اجرک بنانے کے عمل میں وقت اور محنت درکار ہے۔ ایک منفرد کپڑا تیار کرنے میں بیس افراد تک شامل ہو سکتے ہیں، یہ ڈیزائن کی پچیدگی، رنگوں کی تعداد، اور استعمال کئے گئے بلاکس کی مختلف اقسام پر منحصر ہے۔ روایتی اجرک ساز اب بھی صدیوں سے چلے آنے والے طریقے استعمال کرتے ہیں، اور چونکہ اس عمل میں زیادہ تر قدرتی اجزاء استعمال ہوتے ہیں اجرک سازوں کے لیے اپنے ماحول کے ساتھ ہم آہنگی قائم کرنا ضروری ہے۔ خالص کاٹن کے کپڑے کو پہلے دریا کے پانی سے دھویا جاتا ہے اور پھر اُبالا جاتا ہے ۔اس سے کپڑا نرم اور کثافتوں سے پاک ہو جاتا ہے۔ یہ پھر اونٹ کے گوبر، بیجوں کے تیل اور پانی میں بھگویا جاتا ہے، پھر اسے پانچ سے دس روز کے لیے ایک ہوا بند گٹھری میں باندھ دیا جاتا ہے اور اس کے بعد سورج کی روشنی میں خشک کیا جاتا ہے۔ خشک ہونے پر اسے ایک بار پھر تیل لگایا جاتا ہے، پھر دریا میں اچھی طرح دھویا جاتا ہے اور آخر میں خشک لیموں، راب، ارنڈی کا تیل، پانی اور جھاؤ کی چھال پر مشتمل ایک خاص مرکب میں بھگویا جاتا ہے۔ خشک ہونے پر، یہ بالآخر پرنٹنگ کے لیے تیار ہے۔

پرنٹنگ میں استعمال ہونے والے لکڑی کے بلاکس کیکر کے درختوں سے بنائے جاتے ہیں۔ یہ خیال کیا جاتا ہے کہ بلاک پرنٹنگ سب سے پہلے چین میں استعمال کی گئی اور بعد میں یہ جنوب کی جانب موئن جوڈرو منتقل ہو گئی۔ یہ ڈیزائن تب کپڑے پر چھاپا گیا، اور رنگائی سے پہلے چونے کی پیسٹ، کیکر کی گوند، اور چاولوں کی پیسٹ استعمال کرتے ہوئے ڈیزائن کا خاکہ بنایا گیا۔ رنگائی کے عمل میں ایک سے زیادہ مراحل کی ضرورت ہوتی ہے جن میں رنگوں کا استعمال، مثلاً نیلا اور سرخ، اور سفید حصوں کو رنگائی کے دوران بچانے کے لیے قدرتی پیسٹ کا استعمال شامل ہے۔ تیار شے کاریگری کا ایک خوبصورت ٹکڑا اور سندھی ثقافت کے لیے ایک خراجِ تحسین ہے۔

Find out more

Books & Articles

Bilgrami, Noorjehan. Sindh jo Ajrak. Karachi: Department of Culture and Tourism, Government of Sindh, 1990.

Bilgrami, Noorjehan. "Ajrak Cloth from the Soil of Sindh." Lecture. Tokyo University of Foreign Studies. 6 May 2002.

"Ajrak Printing." All India Artisans and Craftworkers Welfare Association (AIACA).

News

Japanwalla, Naseera. "Craftsmanship: The Making of Ajrak." Dawn 26 Sept. 2010.

Cobtribute
p5